/ نعت / فاخرہ بتول / (سلام یا خاتم النبیٌن فخرِ کائنات محمٌد صلی اللہ علیہِ و آلِہ وسلم )

(سلام یا خاتم النبیٌن فخرِ کائنات محمٌد صلی اللہ علیہِ و آلِہ وسلم )

(سلام یا خاتم النبیٌن فخرِ کائنات محمٌد صلی اللہ علیہِ و آلِہ وسلم ) 

جس کو بھی اِسمِ محٌمد(ص)کا نگینہ مِل گیا 

یوں سمجھ لو سارے عالم کا خزینہ مِل گیا 

مُشکلوں میں آپ کو جس نے پُکارا یا نبی!

یوں لگا گرداب میں اُس کو سفینہ مِل گیا

آبِ کوثر کی سِوا توقیر اُس دم ھو گئی

جس گھڑی اُس میں محمٌد ص کا پسینہ مِل گیا

آپ کی چوکھٹ پہ سر اپنا جھُکایا تو لگا

ھم کو جنٌت کی طرف اک اور زینہ مِل گیا

جب خیالوں میں ترے روضے کی جالی چُوم لی

یوں لگا ھم کو تو گھر بیٹھے مدینہ مِل گیا

بدر کے میداں سے لے کے کربلا کے باب تک

ھم کو جینے اور مرنے کا قرینہ مِل گیا

ناز کیوں اپنے مقٌدر پر نہ ھو ھم کو بتول!

پھر گُناہوں کی تلافی کا مہینہ مِل گیا


فاخرہ بتول

فاخرہ بتول نقوی ایک بہترین شاعرہ ہیں جن کا زمانہ معترف ہے۔ فاخرہ بتول نے مجازی اور مذہبی شاعری میں اپنا خصوصی مقام حاصل کیا ہے جو بہت کم لوگوں کو نصیب ہوتا ہے۔ فاخرہ بتول کی 18 کتب زیور اشاعت سے آراستہ ہو چکی ہیں جو انکی انتھک محنت اور شاعری سے عشق کو واضح کرتا ہے۔ فاخرہ بتول کو شاعری اور ادب میں بہترین کارکردگی پر 6 انٹرنیشنل ایوارڈز مل چکے ہیں۔