/ قصیدہ / فاخرہ بتول / خاتونِ جنٌت سیٌدہ فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا

خاتونِ جنٌت سیٌدہ فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا

نقوی 

حیا کی ملکہ، علی ع کی زوجہ، خُدا کا خود ھے حجاب زہرا ع 

رسول ص جس کی کرے تلاوت، وہ نُور ِ حق کی کتاب زہرا ع 

امام بارہ ع پہ جو ھے حُجٌت، طہارتوں کا ھے باب زہرا ع

سوال غیرت کی کون حد ھے، تو اُس کا آیا جواب زہرا ع

وہ بابِ حطہ ھے، آئیتوں میں اُسی کا پرتو ھے، سلسلہ ھے

کبھی محمٌد، کبھی علی ھے، کبھی خدا کا وہ آئینہ ھے

ھےرب سے ملنے کا شوق تجھکو تو اپنی تسبیح پہ جاپ زہرا ع

یقین رکھنا تُو رب سے جا کے تجھے ملائے گی آپ زہرا ع

ھے تیری مریم کنیز، تُو ھے نبوتٌوں کا ملاپ زہرا ع

ترے غلاموں میں انبیاء ہیں، ترا محمٌد ص سا باپ زہرا ع 

ترا تو ثانی کوئی نہیں ھے، طہارتوں کی تُو انتہا ھے

جہاں ھے معراج ہر نبی کی، وہاں سے زہرا ع کی ابتداء ھے

حجابِ وحدت، نبی ص کی عترت، علی ع کی غیرت کا نام زہرا س

نبوتوں کو تُو بانٹتی ھے، ہیں تیرے بیٹے امام زہرا س 

ملائیکہ کو ملا یہ رُتبہ کہا انھوں نے سلام زہرا س

تُو معجزہ ھے، تُو ابتداء ھے۔ ، خدا کا سارا کلام زہرا س

وضو کی تجھکو نہیں ضرورت، طہارتوں کی تُو انتہا ھے

نماز کرتی ھے جس کو سجدہ، مجھے یقیں ھے وہ فاطمہ س ھے


فاخرہ بتول

فاخرہ بتول نقوی ایک بہترین شاعرہ ہیں جن کا زمانہ معترف ہے۔ فاخرہ بتول نے مجازی اور مذہبی شاعری میں اپنا خصوصی مقام حاصل کیا ہے جو بہت کم لوگوں کو نصیب ہوتا ہے۔ فاخرہ بتول کی 18 کتب زیور اشاعت سے آراستہ ہو چکی ہیں جو انکی انتھک محنت اور شاعری سے عشق کو واضح کرتا ہے۔ فاخرہ بتول کو شاعری اور ادب میں بہترین کارکردگی پر 6 انٹرنیشنل ایوارڈز مل چکے ہیں۔