Saturday, 18 January 2020
/ غزل / شاہد کمال / کبھی کماں تو کبھی دار سے الجھتی ہے

کبھی کماں تو کبھی دار سے الجھتی ہے