1. ہوم/
  2. سید تنزیل اشفاق/
  3. صفحہ 1

اپنے حصے کی کوئی شمع جلاتے جاتے

Syed Tanzeel Ashfaq

آپ نے کبھی سوچا کہ آپ اس دنیا میں کیوں ہیں؟ اور اگر آپ نہ ہوتے تو کیا ہوتا؟ آپ یقینا خوش نصیب ہیں کہ آپ اس دنیا میں ہیں۔ جب آپ کے لئے اذن ہوا کہ آپ کا وجود ہونا

مزید »

رحمت کی واپسی بارِ دگر

Syed Tanzeel Ashfaq

خالقِ کائنات کے فیصلے اکثر ہم کم فہموں کو سمجھ نہیں آتے۔ ہر فیصلے پہ ہم سمجھتے ہیں گویا دنیا کے پہلے اور آخری مظلوم بس ہم ہی ہیں۔ ایسا ہرگز نہیں۔ وقتی طور پہ فی

مزید »

سید اشفاق حسین بخاری

Syed Tanzeel Ashfaq

آج بہت رنجور ہوں، دل گرفتہ ہوں۔ اپنے احساسات بیان کرنے سے عاجز ہوں۔ خود کو منہ زور آندھی میں معلق محسوس کر رہا ہوں، جس کا نہ کوئی ٹھکانہ ہو نہ کوئی راہ نما۔ جب

مزید »

ملک صاحب ہوا کیا ہے؟

Syed Tanzeel Ashfaq

ملک صاحب نے کافی عرصے بعد یاد کیا، کہاں ہو؟ ہم نے عرض کیا کہ ہم آپ سے ناراض ہیں۔ کہنے لگے کیوں؟ عرض کیا کہ سارے جہاں کہ پتہ چل گیا کہ ملک صاحب آج کل کیوں خوش ہی

مزید »

تسکینِ قلبِ حسینؑ

Syed Tanzeel Ashfaq

ہم تاریخِ انسانیت کا مطالعہ شروع کریں تو ایک بات تواتر سے عیاں ہوتی ہے کہ ہر دور میں بیٹی کو وہ مقام نہیں ملا کہ جس کی وہ اہل تھی۔ اول تو بیٹی کی آمد کو ہی خوش

مزید »

علیؑ یا علیؑ حیدرؑ حیدرؑ

Syed Tanzeel Ashfaq

ہماری زندگی میں نامِ علیؑ علیہ السلام سے شناسائی اس دنیا میں آنے سے پہلے ہی ہو جاتی ہے۔ وہ یوں کہ ہماری مائیں ہمیں اپنے بطن میں لئے مجلس میں جاتی ہیں۔ ہر مجلس ک

مزید »

نومولود دانشور

Syed Tanzeel Ashfaq

دو دھائی قبل مواصلات کے ذرائع نہایت محدود تھے، نہ صرف محدود بلکہ سست رفتار بھی۔ ایک دوسرے سے رابطہ اور خیر و عافیت کے استفسار کے لئے خطوط کا استعمال ہوا کرتا۔ و

مزید »

کس کی ماں نے کتنا زیور بیچا تھا

Syed Tanzeel Ashfaq

یوں تو ہمارا تعلق پورے پاکستان سے ہے، وہ یوں کہ ہمارا ددھیال سیالکوٹ، ننھیال گجرات، ہماری پیدائش پشاور اور موجودہ رہائش لاہور میں ہے۔ اب تک کی یہ زندگی اسی ایک

مزید »

دعا

Syed Tanzeel Ashfaq

انسان اس دنیا میں بے وارث ہرگز ہرگز نہیں ہے۔ جو کہے کہ میرا کوئی وارث نہیں اس کا وہ اللہ وارث ہے۔ وہ ایسا وارث ہے جو ہر امید و آسرا ٹوٹ جانے کے باوجود بھی قائم

مزید »

الوداع

Syed Tanzeel Ashfaq

اس زندگی کے سفر میں بہت سے مسافر آپ کے ساتھ ہم سفر ہوتے ہیں۔ ہر مسافر اپنی منزل کے آتے ہی آپ کو الوداع کہہ کر رخصت ہوجاتا ہے۔ کچھ مسافر الوداع کہے بغیر الگ ہو ج

مزید »